پاکستان, تازہ ترین

فیصل آباد میں خواتین کو برہنہ کرنے کا معاملہ: دوسرا رخ بھی سامنے آ گیا

فیصل آباد میں خواتین کو برہنہ کرنے کا معاملہ: دوسرا رخ بھی سامنے آ گیا

گذشتہ روز پیش آنے والے اس واقعے کی کچھ سی سی ٹی وی فوٹیجز بھی سامنے آئی ہیں، جن سے یہ تاثر مل رہا ہے کہ ان خواتین نے اپنے آپکو خود بے لباس کیا۔

فیصل آباد میں خواتین پر تشدد اور مبینہ طور پر برہنہ کیے جانے کی ویڈیو وائرل ہونے پر گذشتہ روز کافی بحث ہوئی اور پانچ ملزمان کو گرفتار بھی کیا گیا، تاہم اس واقعے کی کچھ سی سی ٹی وی فوٹیجز بھی سامنے آئی ہیں، جن سے بظاہر یہ تاثر مل رہا ہے کہ ان خواتین نے اپنے آپ کو خود بے لباس کیا۔

تاہم پولیس کا کہنا ہے کہ ابھی اس بارے میں تفتیش جاری ہے کہ یہ حرکت خواتین نے خود کی یا دکان دار نے اور اگر خواتین نے خود ایسا کیا تو انہیں کس چیز نے ایسا کرنے پر مجبور کیا۔

فیصل آباد کے ریجنل پولیس آفیسر (آر پی او) نے اس بارے میں انڈپینڈنٹ اردو کو بتایا کہ ’کپڑے اتارنے کے علاوہ بھی تین جرم ہو چکے تھے۔ ایک ان کو دکان کے اندر ان کی مرضی کے خلاف بند کرنا، انہیں زدوکوب کرنا اور تیسرا ان پر تشدد کرنا۔‘

انڈپینڈنٹ اردو کو موصول ہونے والی ایک سی سی ٹی وی فوٹیج میں دیکھا جا سکتا ہے کہ چار خواتین ایک دکان میں داخل ہوتی ہیں۔ دکان کے اندر کی فوٹیج میں دیکھا جا سکتا ہے کہ ایک شخص کاؤنٹر پر بیٹھا ہے جبکہ خواتین دکان میں گھومنا شروع کر دیتی ہیں۔

ویڈیو کے مطابق ان میں سے ایک خاتون کوئی چیز اٹھاتی ہے جبکہ دوسری خاتون دکان میں پیچھے کی جانب چلی جاتی ہیں جنہیں روکنے کے لیے کاؤنٹر پر بیٹھا شخص ان کی چادر کھینچ لیتا ہے۔ اس کے بعد دکان دار کاؤنٹر سے چھلانگ لگا کر دکان سے باہر بھاگتا ہے۔

ویڈیو میں دیکھا جا سکتا ہے کہ خواتین بھی باہر کی جانب بڑھتی ہیں اور جو خاتون دکان کے پچھلے حصے کی طرف گئی تھیں، جب وہ دکان کے دروازے کی جانب آتی ہیں تو ان کی قمیص آگے سے کھلی ہوئی نظر آتی ہے۔

دکان کے باہر لگے سی سی ٹی وی کیمرے کی فوٹیج میں بھی اسی شخص کو تیزی سے دکان سے باہر آتے دیکھا جا سکتا ہے، جو باہر آکر دکان کا دروزہ بند کر دیتا ہے جبکہ دکان کے اندر موجود خواتین دروزہ اندر سے کھولنے کی کوشش کرتی ہیں۔

ویڈیو کے مطابق باہر موجود دکان دار دیگر لوگوں کو اپنی مدد کے لیے اشاروں سے بلاتا ہے۔ اس دوران لوگ اکٹھے ہو جاتے ہیں اور وہ خواتین بھی باہر آ جاتی ہیں، جن کے ساتھ باہر موجود لوگوں کی ہاتھا پائی ہوتی ہے اور خواتین بھاگنے کی کوشش کرتی ہیں۔

ویڈیو میں دیکھا جاسکتا ہے کہ ان میں سے دو خواتین دور بھاگتی ہیں جبکہ دو وہاں موجود افراد کی گرفت میں آ جاتی ہیں جنہیں وہ زمین پر بٹھا لیتے ہیں۔

اس ویڈیو میں ایک خاتون کے کپڑے پھٹے ہوئے دیکھے جا سکتے ہیں جو خود اپنی پھٹی قمیص کو اتار دیتی ہیں اور بعد میں لڑائی جھگڑے کے دوران وہ خود کو بے لباس کر دیتی ہیں۔

سی سی ٹی وی فوٹیج کے علاوہ جو موبائل ویڈیوز سوشل میڈیا پر وائرل ہوئی ہیں ان میں دیکھا جا سکتا ہے کہ دکان کے اندر ایک خاتون بیٹھی رو رہی ہیں جبکہ ایک کو گھسیٹ کو اندر لایا جاتا ہے اور وہاں جو شخص انہیں اندر لاتا ہے وہ ان کے ساتھ بدزبانی کر رہا ہے اور انہیں اپنے کپڑے اتارنے کا کہہ رہا ہے۔

Author Since: Sep 04, 2021

Related Post